تعلیمی اداروں میں موسم سرما کی چھٹیوں کا معاملہ، وزیر تعلیم پنجاب نے اپنا موقف بتا دیا - Roznama Punjab

تازہ ترین

Home Top Ad

Post Top Ad

Your Ads Here

ہفتہ، 14 نومبر، 2020

تعلیمی اداروں میں موسم سرما کی چھٹیوں کا معاملہ، وزیر تعلیم پنجاب نے اپنا موقف بتا دیا

تعلیمی اداروں میں موسم سرما کی چھٹیوں کا معاملہ، وزیر تعلیم پنجاب نے اپنا موقف بتا دیا

سب سے زیادہ کورونا ایس او پیز پر عملدرآمد اسکولوں میں کیا جا رہا ہے،سکولز بند کرنے کا کوئی فیصلہ نہیں ہوا،وزیر تعلیم پنجاب مراد راس نے موسم سرما کی چھٹیوں کی مخالفت کردی


لاہور( روزنامہ پنجاب اخبار تازہ ترین - 14 نومبر 2020ء) وزیر تعلیم پنجاب مراد راس نے موسم سرما کی چھٹیوں کی مخالفت کردی۔تفصیلات کے مطابق صوبائی وزیر تعلیم مراد راس نے کورونا وائرس کے باعث موسم سرما کی چھٹیوں کی مخالفت کی ہے۔انہوں نے راولپنڈی میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سب سے زیادہ کورونا ایس او پیز پر عملدرآمد اسکولوں میں کیا جا رہا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ اب تک 117 سکولوں میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی ہے جبکہ 16 سکول سیل کیے گئے ہیں۔صوبائی وزیر تعلیم نے مزید کہا کہ پنجاب میں سکول بند کرنے کے حوالے سے کوئی فیصلہ نہیں ہوا ۔ میری سمجھ کے مطابق موسم سرما کی چھٹیاں نہیں ہونی چاہیے۔علاوہ ازیں صوبائی وزیر تعلیم برائے سکول ایجوکیشن پنجاب مراد راس نے کہا ہے کہ وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کی قیادت میں صوبہ پنجاب میںکورونا اور ڈینگی وائرس سے متعلق ایس او پیز پر عمل درآمد جاری ہے۔

(جاری ہے)




اور ان سرگرمیوں کو بھی باقاعدگی سے مانیٹر کیا جارہا ہے۔اس کے ساتھ پولیو مہم میں بھی محکمہ سکول ایجوکیشن اٹک اپنا بھر پور کردار ادا کر رہا ہے ۔ انہوں نے ان خیالات کا اظہار ڈی سی آفس اٹک میں ایک اہم اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔قبل ازیں ایک اور بیان میں وزیر تعلیم پنجاب کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ عالمی وباء کورونا سے متعلق اس وقت صوبہ پنجاب میں ہنگامی صورتحال نہیں ہے ، پورے صوبے میں 2 سو سے زائد اساتذہ اور طلباء میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی ، لہٰذا یہ صورتحال خطرناک نہیں ہے ، اسی وجہ سے ہم موسم سرما میں کی جانے والی چھٹیوں کے حق میں بھی نہیں ہیں ، کیوں کہ پہلے ہی بہت زیادہ چھٹیاں ہوچکی ہیں ، لیکن اس کے باوجود دسمبر کے مہینے تک کوروناوائرس کی صورتحال کو دیکھنے کے بعد پھر کوئی فیصلہ کیا جائے گا۔ 

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں

Post Bottom Ad

YOUR AD HERE